این سی او سی اجلاس میں تعلیمی ادارے مرحلہ وارکھولنے کی تجویزپرغور

اسلام آباد :نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر اجلاس میں‌ تعلیمی اداروں کو بتدریج ٹاپ اینڈ باٹم اپروچ کے تحت کھولنے کی تجویز پر غور کیا گیا ہے جس کی مد میں سکولوں سے پہلے یونیورسٹیاں کھولی جائیں گی۔
تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹرکا اجلاس ہوا، جس میں ملک بھر سے سرکاری و نجی تعلیمی اداروں، مدارس کےنمائندوں نے شرکت کی جبکہ آزاد کشمیر، گلگت بلتستان، صوبائی حکام نے وڈیولنک پر این سی او سی میں شرکت کی ۔ این سی او سی اجلا س میں شرکاء کو تعلیمی ادارے کھولنے کے بعد ممکنہ چیلنجز پر بریفنگ دی گئی ۔ اجلاس میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ کورونا کے ضوابط پرعملدرآمد اور حتمی فیصلے سے پہلے تمام تعلیمی اداروں کی تیاری ضروری ہے ۔ فورم نے تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھولنے کے حوالے سے ایک حکمت عملی تشکیل دینے کا مشورہ دیا ہے۔
اس حوالے سے وزیرتعلیم شفقت محمود نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھولنے کے حوالے سے حتمی فیصلہ اگلے ماہ کی سات تاریخ کو باہمی اتفاق سے کیا جائے گا۔ اجلاس میں اس بات پر زور دیا گیا کہ اداروں کو بتدریج کھولا جائے ، حتمی فیصلہ لینے سے پہلے تمام تعلیمی اداروں کو یقینی بنانا ہوگا کہ تمام اداروں میں کورونا سے متعلق حفاظتی اقدامات کر لیے گئے ہیں ۔شرکاء کو آگاہ کیا گیا کہ ٹریسنگ، ٹریکنگ اور ٹیسٹنگ کی حکمت عملی پھیلاؤ روکنے میں مددگار ثابت ہوگی، اس حوالے سے علامات والے بچوں، ٹیچرز اور اسکول اسٹاف کی ٹیسٹنگ میں اضافہ مفید رہے گا۔
واضح رہے کہ حکومت نے عالمی وبا کورونا وائرس کے پیش نظر جاری لاک ڈاؤن کے دوران ملک بھر میں بند تعلیمی اداروں کو 15ستمبر کو کھولنے کا فیصلہ کررکھا ہے۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں