حکومت کا 15 ستمبر سے مرحلہ وار تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے 15 ستمبر سے ملک بھر میں مرحلہ وار تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ کر لیا۔

بین الصوبائی وزراء تعلیم کا اجلاس وفاقی وزیر شفقت محمود کی زیر صدارت جاری ہے جس میں تعلیمی اداروں کے لیے آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جا رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق حکومت نے 15 ستمبر سے ملک بھر میں میٹرک اور انٹر کی کلاسیں شروع کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے جبکہ ملک بھر کی یونیورسٹیاں بھی 15 سمتبر سے کھول دی جائیں گی۔اجلاس میں تمام صوبائی وزرائے تعلیم شریک ہیں جب کہ وزارت صحت کے حکام کورونا سے متعلق بریفنگ بھی دیں گے۔اجلاس میں یہ بھی طے کیا گیا ہے کہ بڑی کلاسز کو کھولنے کے بعد کورونا کو مانیٹر کیا جائے گا جبکہ کورونا سے نمٹنے کے لیے سختی سے ایس او پیز پر عمل کیا جائے گا۔

کورونا کے پیش نظر ایک ہفتے بعد چھٹی سے آٹھویں کلاسز کی سرگرمیوں کا آغاز ہو گا۔ طلبا کو ماسک کے ساتھ تعلیمی اداروں میں داخلہ یقینی بنانے کی ہدایت کی جائے گی۔اجلاس میں تعلیمی اداروں میں ایس او پیز کو حتمی شکل دی جائے گی۔ مختصر اکیڈمک سلیبس اور 2021 میں امتحانات کا انعقاد ایجنڈے میں شامل ہے۔بین الصوبائی وزرائے تعلیم کے اجلاس میں یکساں نصاب تعلیم کا معاملہ بھی زیر غور آئے گا جس کے بعد تعلیمی اداروں میں سرگرمیاں بحال کرنے سے متعلق سفارشارت قومی رابطہ کمیٹی کو بھجوائی جائیں گی۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں