امریکی ریپ گلوکار کانیے ویسٹ نے صدارتی الیکشن لڑنے کااعلان کردیا

واشنگٹن : امریکی پاپ گلوکار کانیے ویسٹ نے امریکا کے یوم آزادی کے موقع پر صدارتی الیکشن لڑنے کا اعلان کیا ہے۔
برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق اب تک کانیے ویسٹ کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حامی کے طور پر جانا جاتا تھا مگر اب وہ خود صدارتی دوڑ میں شامل ہوگئے ہیں۔ کانیے ویسٹ مشہور رئیلٹی اسٹار کم کارڈیشیان کے شوہر ہیں اوروہ مکمل طور پر ان کی حمایت میں کھل کر سامنے آئی ہیں ۔ ابھی تک کانیے کے کاغذات نمائندگی جمع کروانے سے متعلق تفصیلات سامنے نہیں آئی ہیں ، یہ پہلا موقع نہیں جب پاپ گلوکارنے دعوی کیا ہے کہ وہ وائٹ ہاؤس کے لئے انتخاب لڑ رہے ہیں۔ 2015 کے ایم ٹی وی ویڈیو میوزک ایوارڈز میں بھی ویسٹ نے کہا تھا کہ انہوں نے 2020 میں صدر کے عہدے کا انتخاب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ لیکن گزشتہ نومبر میں انہوں نے بہت وثوق سے یہ کہا کہ وہ 2024 کے انتخابات میں حصہ لیں گے۔
ویسٹ نے فاسٹ کمپنی کے انوویشن فیسٹیول میں ہجوم سے پوچھا۔”کس بات پر ہنس رہے ہو؟” انہوں نے کہا ، “ہم بہت ساری ملازمتیں فراہم کریں گے اورمیں اس بات سے بھاگوں گا نہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ اس دوڑ کے لئے اپنا نام تبدیل کر کے “کرسچین جینیئس بلیئنیر کانیے ویسٹ ” رکھنے پر غور کر رہے ہیں۔
امریکی یوم آزادی کے موقع پر اپنی ٹویٹ میں 43 سالہ ویسٹ نے یہ نہیں بتایا کہ وہ کسی خاص سیاسی جماعت میں شامل ہوں گے یا نہیں ۔کسی بھی صورت میں ایک بڑی جماعت کیلئے نامزدگی کا انتخاب اس مرحلے پر ناممکن ہوگا کیونکہ انتخابات کو صرف چار ماہ باقی ہیں۔
آزاد امیدوار کی حیثیت سے الیکشن لڑنے کے لئے ویسٹ کو ایک مقررہ تاریخ تک دستخط جمع کرنے اور ریاستوں میں اندراج کرنا ہوگا۔ ڈیڈ لائن پہلے ہی کچھ بڑی ریاستوں میں گزر چکی ہے لیکن میوزک اسٹار کے پاس تکنیکی طور پر بہت سے دوسرے لوگوں کو قائل کرنے کا وقت ہوگا۔امکان ہے کہ اس سال کا مقابلہ ریپبلکن پارٹی کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ڈیموکریٹ جو بائیڈن کے مابین ہے ۔
کم کاردیشن نے امریکی پرچم کے ساتھ صدارتی انتخاب کے بارے میں اپنے شوہرویسٹ کے بیان پر ٹویٹ بھی کیا ۔ انہوں نے حالیہ برسوں میں کرمنل جسٹس میں اصلاحات کے لئے امریکی تحاریک میں ایک اہم کردار ادا کیا ہے اورانہوں نے متعدد قیدیوں کو رہا کرنے کے لئے صدر ٹرمپ کوقائل کیا ہے۔دوسری جانب امریکا کی کار بنانے والی ایک بڑی معروف کمپنی نے بھی کانیے ویسٹ کی حمایت کا بھی اعلان کیا ہے۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں