حکومت نے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا

اسلام آباد:حکومت نے مارکیٹ میں ادویات کی کم دستیابی اور خام مال مہنگا ہونے کی وجہ سے ادویات کی قیمتوں میں 262 فیصد تک اضافہ کردیا۔
تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا۔حکومت کا کہنا ہے کہ مارکیٹ میں ادویات کی کم دستیابی، ڈالر کی قیمت میں اضافہ اور خام مال مہنگا ہونے کی وجہ سے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا۔حکومت نے ادویات کی قیمتوں میں 9 تا 262 فیصد تک اضافہ کی منظوری دے دی۔
ان ادویا ت میں بخار، سردرد، امراض قلب، ملیریا ، شوگر ، گلے کی خراش اور فلو کی ادویات شامل ہیں۔اینٹی بائیوٹکس،پیٹ درد،آنکھوں،کان،دانت،منہ، بلڈ انفیکشن کی ادویات بھی مہنگی کردی گئیں اس کے علاوہ جلدکے امراض،زچگی کے بعد استعمال ہونیوالی ادویات سمیت مختلف امراض کی ادویات بھی مہنگی کردی گئیں۔ان ادویات میں68ادویات مقامی جبکہ 26امپورٹد ادویات ہیں۔فارماسوٹیکل کمپنیاں جون 2021تک قیمتوں میں مزید اضافہ کرنے کی مجاز نہیں ہونگی۔
شہریوں نے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ مستردکرتے ہوئے کہا ہے کہ مہنگائی کے باعث دو وقت کی روٹی بھی مشکل ہو گئی ۔ لگتاہے اب شہریوں کو علاج معالجے سے بھی بھی ہاتھ دھونا پڑیں گے۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں