افغانستان مسئلے کا فوجی حل نہیں، آگے بڑھنے کا واحد راستہ مذاکرات ہیں : عمران خان

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ افغانستان مسلے کا فوجی حل نہیں،آگے بڑھنے کا واحد راستہ سیاسی بات چیت ہے۔پاکستان افغانستان میں امن و استحکام کا سب سے بڑا خواہشمند ہے ۔
تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے حزب وحدت اسلامی افغانستان کے رہنما استاد کریم خلیلی نے ملاقات کی جس میں افغان امن عمل میں پیشرفت، پاکستان اور افغانستان کے درمیان باہمی تعلقات پر تبادلہ خیال کیا گیا،وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان افغانستان کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کا خواہاں ہے۔افغانستان مسلے کا کوئی فوجی حل نہیں،آگے بڑھنے کا واحد راستہ سیاسی بات چیت ہے۔انہوں نے کہا کہ افغانستان کے ساتھ تجارت، معاشی اور عوام کی سطح پر تعلقات مضبوط کریں گے۔
عمران خان نے کہا کہ افغانستان میں تنازع کے باعث افغان عوام نے تکالیف برداشت کیں،افغان عوام کے بعد پاکستان افغانستان میں امن و استحکام کا خواہشمند ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان افغان امن عمل کی حمایت جاری رکھے گا۔
اس سے قبل استاد کریم خلیلی نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بھی ملاقات کی ، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق ملاقات کے دوران خطے میں امن وامان کی صورتحال اور باہمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔افغان مفاہمتی عمل اور بین الافغان مذاکرات کے حوالے سے پیش رفت پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔
آئی ایس پی آر کے مطابق ملاقات میں افغان امن عمل میں ہونے والی پیشرفت پر بھی گفتگو کی گئی۔اس موقع پر آرمی چیف نے کہا کہ افغانستان میں امن کا مطلب پاکستان میں امن ہے، ترقی کرتا افغانستان پاکستان اور خطے کے مفاد میں ہے۔محمد کریم خلیلی نےپاکستان کے مثبت کردار کی تعریف کرتے ہوئے، پاک آرمی چیف کے افغان ویژن کو سراہا۔

Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں