جس وزیرنے جاناہے چلاجائے: وزیر اعظم نے وزراء کو واضح پیغام دے دیا

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے پارٹی پالیسی کی خلاف ورزی کرنے والے وزرا کو واضح پیغام دیتے ہوئے کہا ہے کہ جس وزیرنے جاناہے چلاجائے۔
جی این این کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کے زیر صدارت وفاقی کابینہ اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ، جس کے مطابق اجلاس میں وزیراعظم عمران خان بعض وفاقی وزراء پربرس پڑے۔وزیراعظم نے پارٹی پالیسی کی خلاف ورزی کرنے والے وزرا کو مستعفی ہونے کا کھلا پیغام دیتے ہوئے کہا کہ وزرا حکومتی فیصلوں کو قبول کریں ، فیصلوں کی مخالفت کرنی ہے تو مستعفی ہو جائیں، روش برقرار رکھی تو خود فیصلہ کروں گا کہ کابینہ میں رکھنا ہے یا نہیں۔
اجلاس میں وزیراعظم نے مختلف وزراء کی کارکردگی پرعدم اطمینان کااظہارکرتے ہوئے کارکردگی بہتربنانے اورعوام کو سمجھانے کے لیے مختصر،جامع رپورٹ دینے کی ہدایت کی۔ وزیراعظم اداروں میں اصلاحات لانے میں تاخیر پربھی نالاں نظرآئے ۔وزیراعظم نے کہا کہ دو سال گزرنے کے باوجود اداروں میں اصلاحات نہیں آ سکیں۔ڈاکٹر عشرت حسین نے کابینہ کو بتایا کہ اس وقت تک 100 وفاقی ادارے ختم کیے گئے ہیں ۔ وزیراعظم نے آڈیٹر جنرل سے کرپشن سے متعلق رپورٹ مانگ لی، وزیراعظم نے کہا کہ پتا چلاہے کہ اس ادارے پر 200 ارب روپے کی کرپشن کا الزام ہے۔
کابینہ اجلاس میں وزیراعظم نے براڈشیٹ معاملے پرقوم کو حقائق سے آگاہ کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے وزیراطلاعات شبلی فرازکوٹاسک سونپ دیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ پی ڈی ایم نے مچھ واقعے پرسیاست کی جوافسوسناک ہے۔کابینہ نے گمشدہ افراد کے حوالے سے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے گمشدگیوں کے خاتمے کے لیے قوانین بنانے کی ہدایت کر دی۔

Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں