پنجاب میں اِن ہاوس تبدیلی کے معاملے پر شہباز شریف کا حمزہ شہباز کو انتظار کا مشورہ

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے پیپلز پارٹی کی طرف سے پنجاب میں اِن ہاؤس میں تبدیلی کے لیے اپنے بیٹے حمزہ شہباز کو انتظار کا مشورہ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف سے کوٹ لکھپت جیل میں پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز نے ملاقات کی اور ملاقات کے دوران اندرونی کہانی سامنے آ گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق شہباز شریف نے حمزہ کو جارحانہ کی بجائے مصالحانہ پالیسی جاری رکھنے کی بھی ہدایت کر دی۔ حمزہ شہباز نے اپنے والد کو لاہور کی صدارت اور تنظیم نو کے حوالے سے بھی رپورٹ پیش کی جبکہ مریم نواز کی صحت میں بہتری کے حوالے سے بھی اگاہ کیا۔

ملاقات میں پنجاب میں اِن ہاوس تبدیلی کی پیپلزپارٹی کی پیش کش پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا اور مسلم لیگ ن کے قائد کی جانب سے پنجاب میں ان ہاوس تبدیلی کی مخالفت پر بھی مشاورت کی گئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر نے پنجاب میں ان ہاوس تبدیلی کے حوالے سے حمزہ شہباز کو انتظار کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ ان ہاوس تبدیلی کا مناسب وقت پر فیصلہ کریں گے۔ اس موقع پر ڈسکہ الیکشن کے حوالے سے سپریم کورٹ کے فیصلے پر تبادلہ خیال کیا گیا اور 10 اپریل کو ہونے والے ڈسکہ ضمنی الیکشن پر مشاورت کی گئی۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ڈسکہ الیکشن کے حوالے سے سپریم کورٹ کا فیصلہ نہایت ہی خوش آئند ہے۔ ڈسکہ شہر کے ساتھ ساتھ دیہی علاقوں پر الیکشن مہم کو فوکس کریں۔ ارکان اسمبلی اور پارٹی عہدیداروں پر مشتمل چھوٹے چھوٹے گروپ بنا کر الیکشن مہم چلائیں۔ انتخابی مہم میں ن لیگ کی شعبہ خواتین کو متحرک کریں۔ ڈور ٹو ڈور مہم میں خواتین ارکان اسمبلی کو خصوصی ڈیوٹیاں لگائی جائیں۔

Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں