مسجد بننے کے بعد آیا صوفیہ میں آج پہلی بار باجماعت نماز ادا

استنبول:مسجد بننے کے بعد آیا صوفیہ میں آج پہلی بار باجماعت نماز ادا کی گئی جس میں ترک صدر رجب طیب اردگان نے بھی شرکت کی۔
میوزیم سے مسجد میں تبدیل ہونے والے آیا صوفیہ میں نماز جمعہ کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں اور مسجد بننے کے بعد آیا صوفیہ میں آج پہلی بار باجماعت نماز ادا کی گئی جس میں ترک صدر رجب طیب اردگان سمیت سیاسی رہنماوں سمیت ہزاروں شہریوں نے شرکت کی۔آیا صوفیہ میں 86 سال بعد باجماعت نماز ادا کی جارہی ہے۔
ترک صدر رجب طیب اردگان نے مسجد کے باہر تختی بھی لگوا دی ہے جس پر جامعہ مسجد آیا صوفیہ تحریر ہے۔جبکہ مسجد کے اندر نمازیوں کے لیے سبز رنگ کے قالین بچائے گئے ہیں۔
ترک صدر رجب طیب اردگان نے آیا صوفیہ سے متعلق ٹوئٹ میں بیان بھی جاری کیا ہے جس میں ان کا کہنا تھا کہ “اے آیا صوفیہ ہوائیں آزادی سے تمہارے گنبد پر لہراتی رہیں،ازل سے تم ہماری ہو اور ہم تمہارے ہیں۔”

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں