دنیا بھر میں آج ہیپاٹائٹس کا عالمی دن منایا جارہا ہے

ویب ڈیسک : پاکستان سمیت دنیا بھرمیں ہیپا ٹائٹس کے مرض سے آگاہی کا عالمی دن آج منایا جارہا ہے جس کا مقصد ہیپاٹائٹس جیسے تیزی سے بڑھتے ہوئے مرض کے بارے میں لوگوں میں شعور اجاگر کرنا ہے ۔
اس سال اس دن کا موضوع ہے”ہیپاٹائٹس سے پاک مستقبل” جس میں ماؤں اور نوزائیدہ بچوں میں ہیپاٹائٹس کی روک تھام پر خصوصی توجہ مرکوز کرنا ہے۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق اس وقت دنیا بھر میں7 کروڑ افراد اس وقت ہیپاٹائٹس سی ،25 کروڑ سے زائد ہیپاٹائٹس بی کے مرض میں مبتلا ہیں ۔ پاکستان میں ایک کروڑ افراد ہیپاٹائٹس بی اور سی کا شکار ہیں ۔دنیا بھر میں ہر سال دس لاکھ سے زائد افراد ہلاک ہو رہے ہیں جن کی تعداد میں ہر سال اضافہ ہورہا ہے۔پاکستان میں یہ تعداد ایک لاکھ سے زائد ہے ۔
ماہرین کا کہنا ہے کہ جگر کے اس مرض کے پھیلاو ٔمیں سب سے بڑا خطرہ ایسے مریض ہیں جو اپنے مرض سے آگاہ نہیں ہوتے اور وہ اسے دیگر افراد میں منتقل کر دیتے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق ہیپاٹائٹس پانچ قسم کے وائرس پر مشتمل ہے جسے اے، بی، سی، ڈی اور ای میں تقسم کیا گیا ہے۔ طبی ماہرین کے مطابق یہ مرض پیدائش کے دوران ماں سے بچوں میں منتقل ہوسکتا ہے اوراس کے علاوہ آلودہ پانی اور ناقص خوراک ہیپا ٹائٹس کے پھیلنے کی بڑی وجہ ہے۔ ہیپاٹائٹس بی ‘ سی اور ڈی استعمال شدہ سرنجز ‘خون کی منتقلی اور دیگر وجوہات سے پیدا ہوتا ہے خواتین میں ہیپاٹائٹس کی بڑی وجوہ میں بیوٹی پارلر کا کردار اہمیت کا حامل ہے جبکہ مردوں میں حجامت کیلئے استعمال ہونے والے غیر معیاری آلات ہیپاٹائٹس پھیلانے کی اہم وجہ ہیں۔
پاکستان میں اس حوالے سے محکمہ صحت اور سماجی تنظیموں کے زیر اہتمام تقریبات کا اہتمام کیا جائے گا جس سے خطاب کے دوران ماہرین صحت اور مقررین ہیپا ٹائٹس کے مرض کی علامات، نقصانات اور پرہیز و علاج کے متعلق معلومات فراہم کریں گے۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں