ٹرمپ نے بحرین اسرائیل امن معاہدے کوتاریخی قراد دیدیا ، 15ستمبرکودستخط ہونگے

واشنگٹن : امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بحرین اور اسرائیل کے درمیان امن معاہدے کا اعلان کرتے ہوئے اسے تاریخی قرار دے دیا ۔15 ستمبر کو وائٹ ہاؤس میں دونوں ممالک معاہدے پر دستخط کریں گے۔
تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات (یواےای) کے بعد بحرین نے بھی اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کرنے کا فیصلہ کر لیا، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پراعلان کرتے ہوئے لکھا کہ آج ایک اور تاریخی پیشرفت ہوئی ہے، ہمارے دو بہترین دوست اسرائیل اور بحرین امن معاہدے کے لیے رضا مند ہو گئے ہیں۔ اسرائیلی وزیراعظم بنیا من نیتن یاہو اور بحرین کے بادشاہ حماد بن عیسیٰ بن سلمان الخلیفہ سے ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے۔ انہوں نے لکھا کہ بحرین 30 روز کے دوران اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کرنے والا دوسرا عرب ملک ہے۔
تینوں ممالک (امریکا، اسرائیل اور بحرین) نے جومشترکہ اعلامیہ جاری کیا ہےاس کے مطابق بحرین کے شاہ نے امریکی صدر ٹرمپ کا دعوت نامہ قبول کرلیا ہے جہاں وہ اسرائیلی وزیراعظم نتن یاہو اور متحدہ عرب امارات کے ساتھ 15ستمبر کو وائٹ ہاوس میں ہونے والے تاریخی تقریب میں شرکت کرینگے۔اس موقع پر اسرائیلی وزیراعظم بن یامین نتن یاہو اور بحرینی وزیرخارجہ عبداللطیف الزیانی امن معاہدے پر دستخط کریں گے ۔
برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ معاہدہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے تعاون سے ہوا ہے، معاہدے کے مطابق اس کے نتیجے میں اسرائیل مقبوضہ غرب اردن کے مزید علاقے اسرائیل میں ضم کرنے کے منصوبے کو معطل کر دے گا۔
یاد رہے کہ رواں برس 13اگست کو متحدہ عرب امارات(یو اے ای) نے اسرائیل کو تسلیم کرنے کا اعلان کیا تھا ، یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان ہونے والے معاہدے کے بعد ترکی، ایران نے سخت رد عمل کا اظہار کیا تھا جبکہ سعودی عرب کا کہنا تھا کہ آزاد فلسطینی ریاست کے قیام تک اسرائیل سے تعلقات قائم نہیں ہو سکتے۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں