صدر بائیڈن نے افغانستان سے فوج واپس بلانے کی حتمی تاریخ دینے سے انکار کر دیا

واشنگٹن : امریکی صدر بائیڈن نے افغانستان سے فوج واپس بلانے کی حتمی تاریخ دینے سے انکار کر دیا۔امریکی صدر بائیڈن نے کہا کہ اگلے سال افغانستان میں امریکی افواج کی موجودگی نہیں دیکھ رہا۔

امریکی صدرجوبائیڈن نے پہلی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ افغانستان سے امریکی افواج کے انخلا کے لیے یکم مئی کی ڈیڈ لائن پر عمل مشکل ہے، افغانستان سے محفوظ اور منظم طریقے سے فوج واپس لائیں گے، افغانستان میں طویل عرصہ تک فوج رکھنا میرے عزائم میں نہیں ہے،صدر بائیڈن نے افغانستان سے فوج واپس بلانے کی حتمی تاریخ دینے سے انکار کر دیا۔اگلے سال افغانستان میں امریکی افواج کی موجودگی نہیں دیکھ رہا۔

امریکی صدر بائیڈن نے کہا کہ شمالی کوریا کا بیلسٹک میزائل تجربہ اقوام متحدہ کی قرادادوں کی خلاف ورزی ہے،شمالی کوریا نے کشیدگی بڑھانے کا قدم اٹھایا تو اس کا ردعمل دیا جائے گا،شمالی کوریا کے معاملے پر اتحادیوں اور شراکت داروں کے ساتھ مشاورت کر رہے ہیں۔ صدر شی پر واضح کر دیا امریکا چین کے ساتھ محاز آرائی نہیں چاہتا،مستقبل پر بات کرنے کے لیے تمام جمہوری ملکوں کے اتحاد کو بلاؤں گا،تائیوان، جنوبی بحیرہ چین اور دیگر ایشوز پر امریکا اور اتحادی چین کا محاسبہ کریں گے۔

صدر بائیڈن نے مزید کہا کہ چین کے ساتھ سخت مقابلہ دیکھ رہا ہوں، مقابلے کے لیے ہمیں سرمایہ کاری بڑھانا ہوگی، چین گلوبل لیڈر بننے کا ارادہ رکھتا ہے لیکن میرے ہوتے ایسا ہو نہیں سکتا، سنکیانگ کے یغوروں کے ساتھ اور ہانگ کانگ میں جو کچھ ہو رہا ہے اس پر بات کرنے سے نہیں رکوں گا۔

Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں