عمر اکمل فکسنگ کیس:عالمی ثالثی عدالت سے پی سی بی کی درخواست مسترد

لاہور:کرکٹر عمر اکمل فکسنگ کیس میں عالمی ثالثی عدالت نے پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی)کی درخواست مسترد کر دی۔
ترجمان پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی)کےمطابق عالمی عدالت سے عمر اکمل کیس کی سماعت سوئٹزرلینڈ کے علاوہ کسی اور ملک میں رکھنے کی درخواست کی تھی،کیس کی سماعت دوسرے وینیو پر رکھوانے کا مقصد لاجسٹک اور دیگر اخراجات کو کم کرنا تھا تاہم عالمی ثالثی عدالت نے پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی)کی درخواست مسترد کر دی ہے جبکہ پی سی بی کی آن لائن کیس کی سماعت کروانے کی درخواست بھی مسترد ہونے کا امکان ہے۔آن لائن کیس کی سماعت کے لیے دونوں فریقین کا راضی ہونا لازمی ہے،کرکٹر عمرا کمل براہ راست سماعت کے ذریعے کیس کی پیروی کے خواہاں ہیں۔
دوسری جانب پی سی بی اور عمر اکمل نے نوٹس آف ایکسچینج کا جواب جمع کروا دیا ہے اور عالمی ثالثی عدالت آئندہ چند ہفتوں میں کیس کی سماعت کے لیے تاریخ کا اعلان کرے گی۔
واضح رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی) نےآزاد ایڈجیوڈیکٹر کا فیصلہ مسترد کرتے ہوئے کرکٹر عمراکمل کی سزا میں کمی کے خلاف کھِیلوں کی عالمی ثالثی عدالت میں اپیل کی تھی۔اب سوئٹزر لینڈ کے شہر لوزین میں قائم کھیلوں کی عالمی ثالثی عدالت پاکستانی کرکٹر عمر اکمل کے مستقبل کا فیصلہ کرے گی۔پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف آپریٹنگ آفیسر سلمان نصیر کا کہنا تھا کہ یہ ایک مشکل اور تکلیف دہ فیصلہ تھا،سزامیں کمی کے فیصلے پر کچھ تحفظات تھے،عمر اکمل کے کیس میں پی سی بی نے سوچا کے اپیل کرناضروری ہے،عدالت ہمدردی کے تحت کسی کی سزا میں کمی کیسے کر سکتی ہے۔پی سی بی کےآزاد ایڈجیوڈیکیٹر کےسربراہ جسٹس ریٹائرڈ فقیر محمد کھوکھرنےفکسنگ کیس میں عمراکمل کی سزا تین سال سے کم کرکے ڈیڑھ سال کر دی تھی ،آزاد ایڈ جیوڈیکیٹر جسٹس ریٹائرڈ فقیر محمد کھوکھر نے ہمدردانہ رویہ اختیارکرتے ہو ئے پابندی میں کمی کی تھی۔
یاد رہے کہ کرکٹر عمر اکمل کو دو مختلف مقامات پر فکسنگ کی آفر ہوئی تھی عمر اکمل نے فکسنگ کی پیشکش کے بارے میں پی سی بی انٹی کرپشن کو بروقت آگاہ نہیں کیا تھا ،اس سے قبل پی سی بی ڈسپلنری پینل نے کرکٹر عمرا کمل پرتین سالہ کی پابندی کی سزا سنائی تھی۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں