کرائسٹ چرچ میں قومی اسکواڈ کی دوبارہ کورونا ٹیسٹنگ مکمل

لاہور:گذشتہ روز قومی اسکواڈ میں شامل 6 ممبران کے کورونا مثبت آنے کے بعد کرائسٹ چرچ میں قومی اسکواڈ کی دوبارہ کورونا ٹیسٹنگ مکمل ہوگئی ہے، پاکستان اسکواڈ کی تین روزہ آئیسولیشن کل ختم ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ ٹیم اس وقت نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں موجود ہے اور کرکٹ اسکواڈ کے کرائسٹ چرچ پہنچنے پر کورونا ٹیسٹ کیے گئے تھے اور گذشتہ روز پاکستانی اسکواڈ میں شامل 6ممبران کا کورونا ٹیسٹ مثبت آ گیا تھا،مثبت آنے والوں 6 میں سے 2 ارکان پہلے بھی کورونا کا شکار ہوچکے ہیں،تمام 6 ارکان کو قرنطینہ کے لیے بھیج دیا گیا،قرنطینہ میں ارکان میجنڈ آئسولیشن میں رہیں گے،پاکستان اسکواڈ کے کچھ اراکین نے آئسولیشن کے پہلے دن ایس او پیز کی خلاف ورزی کی۔تاہم آج کرائسٹ چرچ میں قومی اسکواڈ کی دوبارہ کورونا ٹیسٹنگ مکمل ہوگئی ہے،پاکستان اسکواڈ کی تین روزہ آئیسولیشن کل ختم ہوگی، پہلا کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آنے والے چھ کھلاڑیوں کے بھی کوویڈ19 ٹیسٹ ہوئے ہیں، پاکستان اسکواڈ کی چودہ روزہ قرنطینہ کے دوران تین بار کورونا ٹیسٹنگ ہونی ہے۔

دوسری جانب وزارت صحت نیوزی لینڈ نے پاکستان کرکٹ اسکواڈ کے تعاون پر اظہار اطمینان کیا ہے،وزارت صحت کے مطابق آئسولیشن کے دوران قوانین پرعمل درآمد کرنے میں بہت بہتری آئی ہے،بہتری وارننگ جاری کرنے کے بعد آئی ہے،ہم ٹیم کے اراکین کا تعاون کرنے پر شکریہ ادا کرتے ہیں،ٹیم میں مثبت کیسز سامنے آنے پر تحقیقات میں تعاون کیا گیا،قوانین کے مطابق عمل اور تعاون سے ہی نیوزی لینڈ کو کوویڈ 19 سے محفوظ رکھا جا سکتا ہے،پروٹوکولز کے مطابق کیسز مثبت آنے والوں سے انٹرویوز کئے گئے ہیں،ان سے قریبی میل جول رکھنے والوں سے بھی پوچھا گیا ہے۔

یاد رہے کہ نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے 6 پاکستانی کرکٹرز کے کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ کو کھلاڑیوں کی جانب سے کورونا ایس اوپیز کی خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا تھا۔ نیوزی لینڈ کرکٹ حکام کا کہنا تھا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا گیا ہے کہ پاکستان سکواڈ کے بعض ارکان نے پہلے ہی دن آئسولیشن پروٹوکولز کی خلاف ورزی کی ہے۔ نیوزی لینڈ کرکٹ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ہم مہمان ٹیم سے بات کریں گے اور ان سے تعاون کرنے کا کہیں گے، جبکہ پروٹوکولز کی خلاف ورزی پر ایکشن لینا پی سی بی کی صوابدید ہے۔

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کی جانب سے شکایت پر ایکشن لیتے ہوئے پی سی بی کے چیف ایگزیکٹیو وسیم خان نے قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کے لیے آڈیو پیغام جاری کردیا ہے ، وسیم خان نے کھلاڑیوں کو خبردار کیا کہ نیوزی لینڈ کرکٹ سے شکایات ملی ہیں۔ اگر سیریز منسوخ ہوئی تو پاکستان کی جگ ہنسائی ہوگی۔ سختی سے کورونا ایس او پیز پر عمل کرنے کی ہدایت بھی دی۔
واضح رہے کہ پاکستانی اسکواڈ 3روز قبل نیوزی لینڈ پہنچا جہاں گذشتہ روز ان کے کورونا ٹیسٹ کیے گئے تھے۔54 رکنی اسکواڈ میں پاکستان ٹیم اور پاکستان شاہینز کے 34کھلاڑی اور 20 آفیشلز شامل ہیں۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان 3 ٹی ٹوئنٹی اور 2 ٹیسٹ میچز کھیلے جائیں گے۔ پہلا ٹی ٹونٹی میچ 18 دسمبر کو آکلینڈ اور دوسرا 20 دسمبرکو ہیملٹن میں کھیلا جائے گا جبکہ سیریز کا تیسرا میچ 22 دسمبر کو نیپیئر میں ہو گا۔ٹیسٹ سیریز کا پہلا میچ 26 دسمبر سے ماؤنٹ ماؤنگنائی میں شروع ہوگا جبکہ دوسرا ٹیسٹ میچ 3 جنوری سے کرائسٹ چرچ میں کھیلا جائے گا۔

بابراعظم ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی مقابلوں میں قومی ٹیم کی کپتانی کریں گے۔ ٹیسٹ ٹیم کے نائب کپتان محمد رضوان اور ٹی20 میں شاداب خان ہوں گے۔ دورے کے دوران پاکستان شاہینز کی ٹیم 2 چار روزہ اور 4 ٹی ٹوئنٹی کھیلے گی۔ پاکستان شاہینز اور نیوزی لینڈ اے کے درمیان پہلا 4 روزہ میچ 10 دسمبر سے شروع ہو گا جبکہ دوسرا 4 روزہ میچ 17 سے 20 دسمبر تک واھنگری میں کھیلا جائے گا۔

Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں