جنسی ہراسانی کیس، عدالت کا پولیس کو کرکٹر بابر اعظم کیخلاف سخت قانونی کارروائی کا حکم

لاہور : جنسی ہراسانی کیس میں ایڈیشنل سیشن جج محمد نعیم نے پولیس کو حامزہ مختار کا بیان ریکارڈ کرکے کرکٹر بابر اعظم کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دے دیا۔
تفصیلات کے مطابق قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کے خلاف اندارج مقدمہ کی درخواست پر سماعت ہوئی ، ایڈیشنل سیشن جج محمد نعیم نے حامزہ مختار کی درخواست پر فیصلہ سنادیا،عدالت نے پولیس کو حامزہ مختار کی بیان ریکارڈ کرنے کی ہدایت کردی۔
سیشن عدالت نے پولیس کو خاتون کا بیان ریکارڈ کرنے کے بعد بابر اعظم کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا حکم دے دیا۔ عدالت نے کہا کہ حساس معاملہ ہے پولیس فوری قانون کے مطابق کاروائی کرے ۔حامزہ مختار عدالتی فیصلہ لے کر متعلقہ ایس ایچ او کے پاس پیش ہوں ۔ ایڈیشنل سیشن جج محمد نعیم نے حمیزہ بی بی کی درخواست پر فیصلہ سنایا ۔متاثرہ خاتون نے موقف اپنایا کہ بابر اعظم نے شادی کا جھانسہ دیکر زیادتی کا نشانہ بناتا رہا ۔
عدالت نے تحریری حکم میں کہا ہے کہ حامیزہ مختار کی درخواست میں بابر اعظم کیخلاف لگائے گئے الزامات قابل دست اندازی جرم میں آتے ہیں،حامیزہ مختار نے اپنی درخواست میں بابر اعظم پر سنگین الزامات لگائے، بابر اعظم پر شادی کرنے کے جھوٹے وعدوں اور جنسی استحصال کا نشانہ بنانے کے بھی سنگین الزامات ہیں۔
واضح رہے کہ قومی کپتان پر ایک خاتون کی جانب سے ہراساں، زیادتی کرنے، مالی غبن اور دیگر الزامات عائد کیے گئے تھے۔ ایف آئی اے نے بھی بابر اعظم کو پوچھ گچھ کے لیے طلب کیا تھا ۔

Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں