فواد چودھری کا وزیراعظم سےٹک ٹاک پابندی پر نظر ثانی کا مطالبہ

اسلام آباد:وفاقی وزیر فواد چودھری نے کہاہے کہ ٹک ٹاک پر جو پابندی لگی اس سے ٹیکنالوجی بزنس کو نقصان پہنچے گا،وزیر اعظم کو کہا ہے کہ ٹک ٹاک پر جو پابندی لگائی ہے اس پر نظر ثانی کریں۔
میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری کا کہنا تھا کہ جب بھی معیشت کو سہارا ملنا شروع ہوتا ہے اپوزیشن تحریک شروع کر دیتی ہے، مریم نواز نے جو تحریک کا سوشہ چھوڑا اس کی کوئی اخلاقی اہمیت نہیں،مریم نواز اور نواز شریف کا جمہوریت سے کوئی تعلق نہیں،وہ لوگ صرف اپنے آٹھ کیسز سے ریلیف لینا چاہتے ہیں،نواز شریف خود اور ان کے بچے لندن میں ہیں اور کارکنوں کو کہہ رہے ہیں کہ تحریک چلاو،نواز شریف نے جو پیسے لوٹیں ہیں وہ واپس کر دیں یا پلی بارگینگ کریں۔
انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن کی تحریک کا کوئی اخلاقی اور سیاسی جواز نہیں،آپ نے الیکشن لڑا اور ہار گئے، آئین کہتا ہے آپ 5 سال انتظار کریں،اپوزیشن کی مہم”ابو بچاؤ”مہم ہے،فیٹف پر بھی اپوزیشن کا مطالبہ تھا کہ نیب کے قانون میں 37 میں سے 34 شقیں ختم کریں،ہم احتساب کے عمل سے پیچھے ہٹ گئے تو ہمارا ووٹر ہمارا گریبان پکڑے گا،ایک سوال کے جواب میں فواد چودھری نے کہا کہ مسلم لیگ ن کو زرداری صاحب نے بچا لیا،اگر مسلم لیگ ن نے استعفے دینے کا اعلان کیا تو 18 یا20 لوگ استعفے دیں گے۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ ٹک ٹاک پر جو پابندی لگی اس سے ہمیں ٹیکنالوجی بزنس کو نقصان پہنچے گا،وزیر اعظم کو کہا ہے کہ ٹک ٹاک پر جو پابندی لگائی ہے اس پر نظر ثانی کریں،ہم ٹیکنالوجی کے میدان میں پہلے ہی بہت پیچھے ہیں اور اگر ہم ایسے ہی پابندیاں لگاتے رہے تو دنیا سے بہت پیچھے رہ جائیں گے۔

News Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں